بچے کا قد جوانی میں کتنا ہو گا ؟ ماہرین نے حیران کن طریقہ بتادیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک)کیا آپ جاننا چاہتے ہیں کہ آپ کے بچے کا قد نوجوانی میں کتنا ہو گا ؟نیو یارک ٹائمز نے بچوں کے قد ناپنے کے حوالے سے 1970کی دہائی سے استعمال ہونے والے اہم فارمولے سے متعلق ایک رپورٹ شائع کی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ماں اور باپ کے مجموعی قد کی اوسط کی مدد سے زیادہ تر بچوں کے قدکے بارے میں صحیح اندازہ

لگایا جا سکتا ہے۔ تاہم اس میںخوراک وغیرہ بھی اہم کردار اداکرتے ہیں۔فارمولہ لڑکوں کے لئے:والدین کے قد کو جمع کر کے اس میں مزید5انچ جمع کریں اور 2سے تقسیم کر دیں۔لڑکیوں کے لئے: والدین کے قد کو جمع کریں اس میں سے 5انچ ضرب کریں اور 2 سے تقسیم کردیں۔رپورٹ کے مطابق، کسی کے حتمی قد کا ساٹھ سے اسی فیصد تعلق اسکی جنس سے بھی ہوتا ہے۔ رپورٹ میں مزید دعو یٰ کیا گیا ہے کہ چھوٹے بہن بھائیوں کا قد عموماًبڑے بہن بھائیوں کی نسبت سے چھوٹا ہوتاہے تاہم یہ ضروری نہیں ہے کہ پیدا ہونے والے بچے کا قد اس کے والدین کے قد سے مطابقت رکھتا ہوکیونکہ اس میں خوراک بھی اہم کردار ادا کرتی ہے۔اسکے علاوہ قد کی پیشگی جانچ کیلئے ایک اورطریقہ بھی رائج ہے کہ۔جب لڑکے دو سال اورلڑکیاں اٹھارہ ماہ کی ہوں تو ان کے اوسط قد کو دوگنا کردیں تو آپ جان سکیں گے کہ آپ انداز لگاسکتے ہیں کہ بچوں کی جوانی میں ان کا اوسط قد کتنا ہوگا۔ تاہم یہ ضروری نہیں ہے کہ پیدا ہونے والے بچے کا قد اس کے والدین کے قد سے مطابقت رکھتا ہوکیونکہ اس میں خوراک بھی اہم کردار ادا کرتی ہے۔اسکے علاوہ قد کی پیشگی جانچ کیلئے ایک اورطریقہ

بھی رائج ہے کہ۔جب لڑکے دو سال اورلڑکیاں اٹھارہ ماہ کی ہوں تو ان کے اوسط قد کو دوگنا کردیں تو آپ جان سکیں گے کہ آپ انداز لگاسکتے ہیں کہ بچوں کی جوانی میں ان کا اوسط قد کتنا ہوگا۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

صحت